Invoking Words After Azan (Adhan)

الدعاء عند الأذان

Invoking Words After Azan (Adhan)

آذان کے بعد دعاء


Hadith about Adhan (Azan) with Translation in English, Urdu & Arabic


Hadith No 877:-  Saad bin Abi Wakas (Radi Allah o anho) narrates from Rasoolullah ﷺ that verily, he said, “Who listens the call of Moazzin and says, “I vouch that there is no true god but Allah Alone, and he has not any partner and verily, Muhammad is his slave and messenger, I am pleased, that he is my Sustainer and Muhammad is the messenger (of Allah) and Islam is my religion”, his all sins will be forgiven.” Narrated in Muslim no 876. and Al-Tirmizi at no 210 and Annisay at no 679 and Ibn e Majah at no 721 and Abu Dawood at no 525, and about all narrations of four Sunan Sheikh Albani said, “Correct”, Abu Yala at no 722 and Hussain Salim said, “Chain of Narrators is correct”, and Ibn e Haban at no 1693 and Shoaib Alurnwoot said, “Chanin of Narrators is correct as per criteria of Muslim” and Alhakim at no 728 and Taleek of Zahby in Talkhees is, “Correct”..

عَنْ عُمَرَ بْنِ الْخَطَّابِ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ -صلى الله عليه وسلم- « إِذَا قَالَ الْمُؤَذِّنُ اللَّهُ أَكْبَرُ اللَّهُ أَكْبَرُ. فَقَالَ أَحَدُكُمُ اللَّهُ أَكْبَرُ اللَّهُ أَكْبَرُ. ثُمَّ قَالَ أَشْهَدُ أَنْ لاَ إِلَهَ إِلاَّ اللَّهُ. قَالَ أَشْهَدُ أَنْ لاَ إِلَهَ إِلاَّ اللَّهُ ثُمَّ قَالَ أَشْهَدُ أَنَّ مُحَمَّدًا رَسُولُ اللَّهِ. قَالَ أَشْهَدُ أَنَّ مُحَمَّدًا رَسُولُ اللَّهِ. ثُمَّ قَالَ حَىَّ عَلَى الصَّلاَةِ. قَالَ لاَ حَوْلَ وَلاَ قُوَّةَ إِلاَّ بِاللَّهِ. ثُمَّ قَالَ حَىَّ عَلَى الْفَلاَحِ. قَالَ لاَ حَوْلَ وَلاَ قُوَّةَ إِلاَّ بِاللَّهِ. ثُمَّ قَالَ اللَّهُ أَكْبَرُ اللَّهُ أَكْبَرُ.قَالَ اللَّهُ أَكْبَرُ اللَّهُ أَكْبَرُ. ثُمَّ قَالَ لاَ إِلَهَ إِلاَّ اللَّهُ. قَالَ لاَ إِلَهَ إِلاَّ اللَّهُ. مِنْ قَلْبِهِ دَخَلَ الْجَنَّةَ ». رواہ مسلمؒ برقم 876, وابوداودؒ برقم 527 قال الشیخ البانیؒ ۔صحیح، وابن حبانؒ 1685 وقال شعیب الارنؤوط اسنادہ صحیح علی شرط مسلمؒ۔

ترجمہ۔ 877سعد بن ابی وقاص (رضی اللہ تعالیٰ عنہ) رسول اللہ ﷺ سے روایت کرتے ہیں کہ بے شک انہوں نے ارشاد فرمایا، “جو کوئی مؤذن کی آذان جب سنتا ہے اور کہتاہے کہ میں گواہی دیتا ہوں کہ اللہ کے سوا کوئی معبود نہیں (اور) وہ یکتاہے اور نہیں کوئی شریک اس کا (ذات وصفات میں) اوربے شک محمد () اس کے بندے اور رسول ہیں، میں راضی ہوگیا اللہ کے رب ہونے پر اور محمد() کے رسول ہونے پر اور اسلام کے دین ہونے پر ، تو بخش د ئیے جاتے ہیں اس کے تمام گناہ” .روایت کی ہے مسلمؒ نے نمبر 877 پراورالترمذیؒ نے نمبر 210 پر اورالنسائیؒ نے نمبر 679 پر اورابن ماجہؒ نے نمبر 721 پر اورابوداودؒ نے نمبر 525 پر اورسنن اربعۃ کی تمام روایات کے بارے کہا الشیخ البانیؒ نے کہ صحیح ہیں اورابویعلیؒ نے نمبر 722 پر اورکہاحسین سلیم اسد نے اسنادہ اس کی صحیح ہے ،اورابن حبانؒ نے نمبر 1693 پر کہا شعیب الارنؤوط نے اسناداس کی صحیح ہے مسلمؒ کہ شرط پر اور الحاکمؒ نے نمبر 728 پر ، تعلیق الذہبیؒ کی تلخیص میں ہے کہ صحیح ہے۔

 

Related Topics:

Benefits of Repeating Azan (Adhan) After the Muazzin

Muazzins will have Long Necks on the Day of Judgement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *