Timings of Five Daily Prayers in Short

مواقیت صلاۃ الخمسۃ بالاجمال

Timings of Five Daily Prayers in Short

 نمازوں کے اوقات اختصارسے

(Namazoun Ke Aukaat Ikhtesaar Se)


Prayer Timings HadithTranslation in English, Arabic & Urdu


Hadith No 966:- Abdullah bin Amr (Radi Allah o anho) narrates that, “Verily, the Apostle ﷺ said, “Dhuhr (time of afternoon salat) starts when the Sun is declined and shadow of a man has become equal to his height upto the start of Asr (prayer). And time of Asr prayer is up to that the Sun has become pale and time of Maghrib prayer is up to the end of sun-glow and time of Isha prayer is up the middle of the night and time of dawn prayer is the at start of dawn (appearing of the rays of light in the east) up to sunrise and cease the offering prayer at the sun-rising time because it rises in between the two horns of the devil.” Narrated Muslim at no 966, 967 and Ahmad bin Hanbal at no 6966, 6993, 7077 and Taleek of Shoaib Alurnwoot about three narrations is, “Chain of narrators is correct as per criteria of both Sheikh (Bukahri and Muslim).”

 عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عَمْرٍو، أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ وَقْتُ الظُّهْرِ إِذَا زَالَتْ الشَّمْسُ وَكَانَ ظِلُّ الرَّجُلِ كَطُولِهِ مَا لَمْ يَحْضُرْ الْعَصْرُ وَوَقْتُ الْعَصْرِ مَا لَمْ تَصْفَرَّ الشَّمْسُ وَوَقْتُ صَلَاةِ الْمَغْرِبِ مَا لَمْ يَغِبْ الشَّفَقُ وَوَقْتُ صَلَاةِ الْعِشَاءِ إِلَى نِصْفِ اللَّيْلِ الْأَوْسَطِ وَوَقْتُ صَلَاةِ الصُّبْحِ مِنْ طُلُوعِ الْفَجْرِ مَا لَمْ تَطْلُعْ الشَّمْسُ فَإِذَا طَلَعَتْ الشَّمْسُ فَأَمْسِكْ عَنْ الصَّلَاةِ فَإِنَّهَا تَطْلُعُ بَيْنَ قَرْنَيْ شَيْطَانٍ” رواہ المسلمؒ برقم 966، 967 واحمدبن حنبلؒ برقم 6966، 6993، 7077 وتعلیق شعیب الارنؤوط فی روایات الثلاثۃ، اسنادہ صحیح علی شرط الشیخین ۔

ترجمہ ۔ 966 – عبداللہ بن عمرو (رضی اللہ تعالیٰ عنہ) سے روایت ہے کہ، بے شک رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا ، “ظہر کاوقت (شروع ہوجاتا) ہے جب سورج ڈھل جائے اور (اس وقت تک ہے) جب آدمی کا سایہ اس کی لمبائی (قد ) کے برابر ہو جائے، ابھی عصر کا وقت نہ (شروع ) ہو چکا ہو، اور عصر کا وقت (شروع ہوتاہے) ہے کہ ابھی سورج کا رنگ زرد نہیں ہوا، اور مغرب کی نماز کا وقت (غروب سے ) جب تک شفق (افق پر سورج کی روشنی) نہ غائب ہوجائے، اور عشاء کی نماز کاوقت آدھی رات تک ہے ، اور صبح کی نماز کا وقت طلوع فجر سے (شروع ہوتا) ہے جب تک کہ طلوع نہ ہوجائے اور جب سورج طلوع ہوگیا تو چاہئیے کہ رک جاؤنماز (پڑھنے) سے ، پس بے شک وہ (سورج) طلوع ہوتاہے شیطان کے دونوں سینگوں کے درمیان”۔ روایت کی ہے المسلم نمبر 966 ، 967 پر اور احمد بن حنبلؒ نے نمبر 6966 ، 6993، 7077پر کہاتعلیق شعیب الارنؤوط تینوں روایات کے بارے ہے کہ اسناد اس کی صحیح ہے شیخین (بخاریؒ ومسلمؒ) کی شرط پر۔

Related Topics:

Maghrib Prayer End Time

Initial Time of Maghrib Prayer (Time Limit)

Perform Zuhr Prayer at Cool Time of the Noon

Last Time of Asr Prayer

Rewards of Fajr Prayer in The Morning Light

Timings of Five Prayers

Timing of Fajr and Asr Prayer

Advantages of Prayer Offered in Time

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *