What is The Meaning of Nikah (Marriage)

ما معنى النكاح ؟

What is The Meaning of Nikah (Marriage)

نکاح کا کیا مطلب ہے؟

( Nikah Ka Kia Matlab Hai ? )

What is The Meaning of Nikah (Marriage)


What does Nikah Means “Translation in English, Arabic & Urdu”


Allah the Exalted has said (then marry (other) women of your choice.. 3 Annisaa) That means here, wedding. (Alqurtaby part 5 page 13) (marry with your choice) So it means, marry a good one from women… means Halal and who has been mentioned Haram by Allah is not good. (Alqurtaby part 5 page 12)

قول اللہ تعالیٰ (فَانْكِحُوا مَا طَابَ لَكُمْ مِنَ النِّسَاءِ۔۔۔(3 النساء)۔۔۔ (فانکحوا)، وهو أن المراد بما هنا العقد (القرطبیؒ ج 5 ص 13 ) (فَانْكِحُوا مَا طَابَ ) فالمعنى فانكحوا الطيب من النساء، أي الحلال، وما حرمه الله فليس بطيب (القرطبیؒ ج 5 ص 12)

ترجمہ ۔اللہ تعالیٰ کا قول (پس نکاح کرو (ان سے )جو حلال ہوں تمہارے لئیے عورتو ں میں۔۔۔(3 النساء ) اوروہ بے شک مراد اس کے معنی سے (مرد عورت کو) بندھن (میں باندھنا) ہے ۔۔(القرطبیؒ ج 5 ص 13) (پس نکاح کرنا ان سےجوطیب عورتوں میں سے ہوں ) پس معنی ہے نکاح کرو طیب عورتوں میں سے یعنی حلال عورتیں اورجو اللہ نے حرام فرمادیں تو وہ طیب نہیں ہیں۔ (القرطبیؒ ج 5 ص 12)۔ 


Meaning of Nikah in English, Arabic & Urdu


Allah the Exalted said (Untill she marry with a husband other than that (previous) …230 Albaqarah) said, and scholars are at this (view) that here (it means) intercourse.

 قول اللہ تعالیٰ (حَتَّى تَنْكِحَ زَوْجًا غَيْرَهُ ۔۔۔230 البقرۃ) قال: واهل العلم على أن النكاح هاهنا الجماع (القرطبیؒ ج 3 ص 148)

ترجمہ ۔ اللہ تعالیٰ کا قول (یہاں تک کہ نکاح کرے خاوند سے جو اس (پہلے) کا غٰیر ہو۔۔۔230 البقرۃ) کہا ، اوراہل علم اس (نقطہ نظر) پر ہیں کہ یہا ں جماع (مراد) ہے۔ (القرطبیؒ ج 3 ص 148)۔


What Does Nikah Means in English, Arabic & Urdu


Allah the Exalted has said (And examine the orphans (their ability) until they reach the age of marriage…6 Annisa) Al-ibtilao (means) to authorize… (Alqurtaby part 5 page 34) …and that is…. To become capable to marry (Alqurtaby part 3 page 89) So, added between the power of body and that is being capable for marriage (Alqurtaby part 7 page 135)

قول اللہ تعالیٰ ( وَابْتَلُوا الْيَتامى حَتَّى إِذا بَلَغُوا النِّكاحَ ۔۔۔6 النساء) – الابتلاء الاختبار ۔۔۔(القرطبیؒ ج 5 ص 34) وهو ۔۔۔ بلوغ المكلف النكاح. (القرطبیؒ ج 3 ص 89 ) فجمع بين قوة البدن وهو بلوغ النكاح (القرطبیؒ ج 7 ص 135 )

ترجمہ ۔ اللہ تعالیٰ کا قول (اور آزمائش کرو یتیموں کی ( قابلیت کی ) یہاں تک کہ جب وہ پہنچ جائیں بلوغ کو) الابتلاء یعنی آزمائش کرنا۔۔۔ (القرطبیؒ ج 5 ص 34) اور وہ ہے ۔۔۔ نکاح کے مکلف ہونے کو پہنچ جانا (القرطبیؒ ج 3 ص 89) پس جمع فرمایا قوت بدن کو اور وہ ہے نکاح (کی استعداد ) تک پہنچنا۔ (القرطبیؒ ج 7 ص 135)۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *