When Bath Becomes Obligatory

متی یجب الغسل ؟

When Bath Becomes Obligatory

غسل کب واجب ہوتا ہے؟


1st Hadith about Bath (Ghusl) with Translation in English, Urdu & Arabic


Hadith No 282: Abu Hurairah (Radi Allahu anhu) narrates from Holy Prophet that he said, “When a (husband) sat in between four limbs (of his wife) and struggled (for intercourse) with her, a (complete) bath has become obligatory (upon both).” (Narrated Al-Bukhari and Al-Muslim at No 525, and at No 526 with text, “When (a husband) sat in between her (wife’s) four limbs and circumcised part touched with (her) circumcised part then verily, a bath has become obligatory”, and Annisay at no 191, 192 and Ibn Majah at no 610 and Abu Dawood at no 216 with additional words, “circumcised part sticked with (her) circumcised part”, and about all narrations of the three scholars, Sheikh Albany said, “Correct”, and Ahmad bin Hanbal at no 8557 with additional words, “If (any one) ejaculated or not” and at no 9096 , 10757 and Ibn e Haban at no 1178 and about narrations of both scholars, Taleek of Shoaib of Alurnwoot said, “Chain of narrators is correct as per criteria of both Sheikhs (Bukhari and Muslim) and Addarmy at no 761, Hussain Salim Asad said, “Chain of narrators is correct”.

 عن أبي هريرة عن النبي صلى الله عليه وسلم قال “إذا جلس بين شعبها الأربع ثم جهدها فقد وجب الغسل (رواہ البخاریؒ والمسلمؒ 525 و 526 بلفظ “إِذَا جَلَسَ بَيْنَ شُعَبِهَا الْأَرْبَعِ وَمَسَّ الْخِتَانُ الْخِتَانَ فَقَدْ وَجَبَ الْغُسْلُ” والنسائی 191 ، 192 و ابن ماجہؒ برقم 610 وابو داودؒ برقم 216 بزیادۃ “والزق الختان بالختان” وفی اصحاب الثلاث قال الشیخ البانیؒ صحیح، واحمد بن حنبلؒ برقم 8557 بزیادۃ “أنزل أو لم ينزل” وبرقم 9096 ، 10757و ابن حبانؒ برقم 1178، وفی کلیہما تعلیق شعیب الارنؤوط اسنادہ صحیح علی شرط الشیخین والدارمیؒ برقم 761 قال حسین سلیم اسد، اسنادہ صحیح) ۔

ترجمہ۔ 282 – ابو ہریرۃ (رضی اللہ عنہ) نبی سے روایت کرتے ہیں کہ ارشاد فرمایا ،”جب بیٹھ گیا (خاوند بیوی کے) چار زانو میں اور کوشش کی اس کے ساتھ تو بے شک واجب ہو گیا (ان پر ) غسل” (روایت کی ہے البخاری نے اور المسلمؒ نے نمبر 525پر، اور 526پر ان الفاظ سے، “جب بیٹھ جائے اس کے چارزانو میں اور مس کرجائے ایک (کی) ختنے جگہ (دوسرے کی) ختنے کہ جگہ سے تو بے شک (ان پر) غسل واجب ہوگیا” ۔ اورالنسائی نے 191 ، 192 پر اور ابن ماجہؒ نے 610 پر، اورابو داودؒ نے 216 پر ان زائد الفاظ کے ساتھ،”اور چپک گیا (ایک کے) ختنے کا مقام (دوسرے کے) ختنے کے مقام سے”اورتینوں اصحاب کی روایات کے بار ے کہا الشیخ البانیؒ نے صحیح ہے اوراحمد بن حنبلؒ نے نمبر 8557 ان زائد الفاظ سے، “کسی کو انزال ہوایانہیں ہوا” اورنمبر 9096 ، 10757 پر اور ابن حبانؒ نے نمبر 1178پر ، اوردونوں کی روایات کے بارے تعلیق شعیب الارنؤوط کی ہے کہ اسناد اس کی صحیح ہے الشیخین (بخاریؒ ومسلمؒ) کی شرط پر اورالدارمیؒ نمبر 761 پر کہا حسین سلیم اسد نے اسناداس کی صحیح ہے) ۔


2nd Hadith about Bath (Ghusl) with Translation in English, Urdu & Arabic


Hadith no 25081: Ayesha (Razi Allah o anha) narrates that Rasoolullah said, “When circumcised part (of husband) exceeded (in his wife’s) circumcised part then verily, bath has become obligatory (upon both)”. (Narrated Ahmad bin Hanbal, and at no 21134, 25699, 25320, 25081, 26067 and about all Taleek of Shoaib Alurnwoot is, “Hadith is correct”, and Ibn e Haban at no 1176, 1183 Taleek of Shoaib Alurnwoot is, “Chain of narrators is correct”, and Attrimzy at no 108 and Ibn e Majah at no 608, 611, about narrations of both scholars Sheikh Albani said, “Correct”.

عن عائشة قالت قال رسول الله صلى الله عليه و سلم : إذا جاوز الختان الختان فقد وجب الغسل (رواہ احمدبن حنبلؒ وبرقم 21134 ،24699، 25320، 25081، 26067 وفی کل تعلیق شیعب الارنؤوط، حدیث صحیح ،وابن حبانؒ برقم 1176، 1183 تعليق شعيب الأرنؤوط اسنادہ صحیح، والترمذیؒ برقم 108، وابن ماجہؒ برقم 608، 611 وفی اصحاب الاٹنین قال الشیخ البانیؒ )۔

ترجمہ۔ 25081 عائشۃ (رضی اللہ تعالیٰ عنہا) سےروایت ہےکہا کہ ارشاد فرمایا رسول اللہ ﷺ نے،” جب تجاوزکر(چھپ) جائے (میاں کے) ختنے کا مقام (بیوی کے) ختنے کے مقام سے تو بے شک واجب ہو گیا (ان پر) غسل”۔(روایت کی ہے احمدبن حنبلؒ نے، اورنمبر 21134 ،24699، 25320، 25081، 26067 پر اور سب کے بارے تعلیق شیعب الارنؤوط کی ہے کہ حدیث صحیح ہے اور ابن حبانؒ نے نمبر 1176، 1183 پر تعليق شعيب الأرنؤوط کی ہے کہ اسناداس کی صحیح ہے اورالترمذیؒ نے نمبر 108پر اورابن ماجہؒ نےنمبر 608، 611 پر اوردونوں کی روایات کے بارےکہا الشیخ البانیؒ نے کہ صحیح ہے) ۔


3rd Hadith about Bath (Ghusl) with Translation in English, Urdu & Arabic


Hadith no 5656: Umme Salma (Radi Allahu o anha) narrates that Umme Sulaim (Razi Allah o anha) came to Rasoolullah and asked, “O Rasoolullah (), Allah does not blush of truth, if a woman wetted in dream, will it be necessary for her to take a bath?” (Narrated Al-bukhari, and at no 127, 273, 3081, 5626 and Al-muslim at no 470 with text, “He (Rasoolullah ﷺ) said, “when she experiences the same like a man (a wet dream) she should take a bath” and at no 468, 469, 471 and Al-Tirmidhi at no 122 and Annisay at no 195, and Ibn e Majah at no 600, 601 and Abu Dawood at no 237 and about narrations of three scholars Sheikh Albany said, “Correct”, and Amad bin Hanbal at no 12244, 13077, 14042, 26655 and Ibe Haban at no 1164, 6184 about narrations of both Taleek of Shoaib Alurnwoot is, “Chain of narrators is correct as per criteria of both Sheikhs (Bukhary and Muslim)”, and Abu Yala at no 2920, 3114, 3164 about all Hussain Salim Asad said, “Chain of narrators is correct”.

عن أم سلمة رضي الله عنها قالت جاءت أم سليم إلى رسول الله صلى الله عليه وسلم فقالت يا رسول الله إن الله لا يستحي من الحق فهل على المرأة غسل إذا احتلمت فقال نعم إذا رأت الماء (رواہ البخاریؒ وبرقم 127، 273، 3081، 5626، والمسلمؒ برقم 470 بلفظ ” فَقَالَ إِذَا كَانَ مِنْهَا مَا يَكُونُ مِنْ الرَّجُلِ فَلْتَغْتَسِلْ” وبرقم 468، 469، 471، والترمذیؒ برقم 122 والنسائی برقم 195 وابن ماجہؒ برقم 600 ، 601،وابوداودؒ برقم 237 وفی روایات اصحاب الثلاث قال الشیخ البانیؒ صحیح، واحمدبن حنبلؒ برقم 12244، 13077، 14042، 26655 وابن حبانؒ 1164، 6184، وفی روایات کلیہما تعلیق شعیب الارنؤوط اسناہ صحیح علی شرط الشیخین، وابو یعلیؒ برقم 2920، 3114، 3164، وفی کل قال حسین سلیم اسد اسنادہ صحیح)۔

ترجمہ۔  5656 ام سلمۃ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہا کہ آئیں ام سلیم (رضی اللہ عنہا) رسول اللہ ﷺ کے پاس (مسئلہ پوچھنے) تو عرض کی یارسول () بے شک اللہ تعالیٰ حیاء نہیں فرماتا حق (بات کرنے) سے ، تو کیا عورت پر بھی غسل (واجب) ہے جب اس کو احتلام ہوجائے، تو فرمایا ہاں، جب وہ (عورت) پانی (منی) دیکھ لے (جسم یا کپڑوں پر)”۔(روایت کی ہے البخاریؒ نے اور نمبر 127، 273، 3081، 5626 پر اورالمسلمؒ نے نمبر 470 پر ان الفاظ سے ” پس ارشاد فرمایا (رسول اللہ ﷺ نے) جب ہو جائے اس کے ساتھ وہ جو مرد کے ساتھ ہوتاہے (یعنی احتلام ہو جائے) تو ا سے چاہئیے کہ غسل کرے “اور نمبر 468، 469، 471 پراورالترمذیؒ نے 122 پر اورالنسائی نے نمبر 195 پر اورابن ماجہؒ نے نمبر 600 ، 601 پر اورابوداودؒ نے نمبر 237 پر اور تینوں اصحاب کی روایات کے بارے کہا الشیخ البانیؒ نے صحیح ہے اوراحمدبن حنبلؒ نے نمبر 12244، 13077، 14042، 26655 پر اورابن حبانؒ نے 1164، 6184،پر اوردونوں کی روایات کے بارے تعلیق شعیب الارنؤوط کی ہے کہ اسناد اس کی صحیح ہے شرط الشیخین (بخاریؒ اور مسلمؒ) پر اورابو یعلیؒ نے 2920، 3114، 3164،پر اورکہا ان سب کے بارے حسین سلیم اسد نے کہ اسناداس کی صحیح ہے)۔۔

 

Related Topics:

Ghusl Janabat for Female with Braided Hair

Taking Bath on Seminal Emission

The Sexually Discharge Spoils Stored Water

Take A Bath After Menstruation Period in Islam

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *